عوام کی راحت رسانی اور متاثرین کی فوری بازآبادکاری کے لئے ٹھو س اقدامات اٹھائے جائیں: ڈاکٹر فاروق عبداللہ

سری نگر،جون۔نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ(رکن پارلیمان) نے وادی، خطہ چناب اور پیرپنچال میں مسلسل اور موسلا دھار بارشوں، بادل پھٹنے اور سیلابی ریلوں کے نتیجے میں ہوئے مالی اور جانی نقصان پر نہایت رنج و الم اور دکھ کا اظہار کیا ہے اور انتظامیہ پر زور دیا کہ کئی مقامات پر پھنسے ہوئے کنبوں کو نکالنے کے لئے بچاؤ کارروائیوں میں تیزی لائی جائے تاکہ قیمتی انسانی جانوں کو بچایا جاسکے۔ انہوں نے انتظامیہ کی اُن کوششوں کی بھی سراہنا کی، جن میں کولگام کے ویشو نالہ میں پھنسے 7 کنبوں کے 50 افراد اور دیگر مقامات پر پھنسے افراد کو نکال کر محفوظ مقامات پر پہنچایا گیا۔ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے حکومت پر زور دیا کہ اُن لوگوں کی امدادکاری اور بازآبارکاری کیلئے فوری اقدامات اٹھائے جائیں جن کے مکانات سیلابی ریلوں کے نتیجے میں ڈھہ گئے اور ایسے کنبوں کیلئے عارضی قیام و طعام کا بھی بندوبست کیا جائے جن کے مکانات اور رہائشیں ناقابل رہائش ہو گئے ہیں۔ انہوں نے سیلابی ریلوں سے منقطع ہوئے سڑکوں رابطوں اور منہدم ہوئے پلوں کی فوری مرمت کی جائے کیونکہ سڑک رابطوں کے ہونے سے ہی ریلف اور راحت کاری کے اقدامات ممکن ہوسکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایسے افراد کیلئے خصوصی مالی امداد کا اعلان کیا جانا چاہئے جن کے مال مویسی سیلابی ریلوں کی نذر ہوگئے ہیں۔ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے سرینگر جموں شاہراہ کی فوری بحالی کیلئے ٹھوس اقدامات کی بھی اپیل کی اور ساتھ ہی نشیبی علاقوں سے پانی کی نکاسی کیلئے پمپ نصب کرنے پر زور دیا۔

Advertisement

 

Advertisement

Related Articles