کسانوں کے اتحاد سے بنے گی آر ایل ڈی کی حکومت:جینت

سہارنپور:اکتوبر۔ مرکز کی نریندر مودی اور اترپردیش کی یوگی حکومت پر کسانوں و مزدوروں کے مفادات کی اندیکھی کرنے کا الزام لگاتے ہوئے آر ایل ڈی صدر جینت چودھری نے کسانوں سے متحد ہوکر 2022 کے اسمبلی انتخابات میں آر ایل ڈی اتحاد والی حکومت بنانے کی اپیل کی۔مسٹر چودھری نے ہفتہ کی دوپہر سابق مرکزی وزیر رشید مسعود کے آبائی قصبہ گنگوہ میں انہیں کے بھتیجے نعمان مسعود کے ذریعہ منعقد جن آشیرواد پتھ ریلی کوخطاب کرتے ہوئے کہا کہ اترپردیش میں اتحاد کی حکومت آنے پر مغربی اترپردیش میں ہائی کورٹ بنچ کا قیام کیا جائےگا۔ وزیر اعظم سمان ندھی اسکیم چھ ہزار سے بڑھا کر 12ہزار روپئے کی جائے گی۔ درمیانے درجے کے کسانوں کو 15ہزار روپئے سالانہ دئیے جائیں گے۔منریگا اسکیم گاوں کی طرح شہروں میں بھی نافذ کی جائے گی۔ پولیس میں خواتین کو 50فیصدی ریزرویشن دیا جائے گا۔ اترپردیش میں روڈ ویز بسوں کی تعداد 75ہزار کی جائے گی۔ سرکاری اسکولوں کو کمپیوٹرائز کیا جائےگا۔انہوں نے کہا کہ اسمبلی انتخاب سے قبل وہ بزرگ کسانوں کا آشیرواد لینے آئے ہیں۔ اگر کسان ذات برادری اور مذہبی دیواروں کو توڑ کر متحد ہوجاتے ہیں تو کسانوں کی وہی طاقت پھر سے اترپردیش اور ملک میں قائم ہوجائے گی جو چودھری چرن سنگھ کے زمانے میں تھی۔اس سے قبل ادی علاقے کے تیترو میں 10اکتوبر کو ایس پی ضلع صدر چودھری رودر حسین اور ان کے بھائی اندرحسین کے ذریعہ ایس پی صدر اکھلیش یادو کی بری ریلی کا انعقاد کرایا گیاتھا۔

Advertisement

Related Articles