ٹی۔20 ورلڈ کپ میں تیسرے نمبر پر بیٹنگ کروں گا: وراٹ

دوبئی، .اکتوبر , ہندوستانی کپتان وراٹ کوہلی نے اشارہ دیا ہے کہ وہ ٹی۔20 ورلڈ کپ میں نمبر 3 پر بیٹنگ کرنے آئیں گے۔ پیر کے روز انگلینڈ کے خلاف وارم اپ میچ میں ٹاس کے دوران انہوں نے بتایا کہ لوکیش راہل کو انڈین پریمیئر لیگ (آئی پی ایل) 2021 میں جس شکل میں نظر آئے اس نے انہیں تیسرے نمبر پر آنے پر مجبور کردیا ہے۔ وراٹ نے بتایاکہ آئی پی ایل شروع ہونے سے پہلے چیزیں مختلف تھیں اور اب راہل اسی رنگ میں واپس آئے ہیں جیسا کہ وہ ہمیشہ کھیلتے ہیں۔ لہذا اب میرے لیے اننگز کو نظر انداز کرتے ہوئے اننگز کھولنا مشکل ہے۔ روہت کے بارے میں بھی نہیں سوچ سکتا۔ وہ ایک عالمی معیار کے کھلاڑی ہیں اور ہمارے لیے وہ سب سے اوپر آئیں گے اس لیے میں اب تیسرے نمبر پر بیٹنگ کروں گا۔ پچھلے تین ورلڈ کپ میں وراٹ کوہلی نے ہندوستان کے لیے 16 میچ کھیلے ہیں اور مجموعی طور پر وہ تیسرے نمبر پر بیٹنگ کر چکے ہیں۔ کوہلی 2014 کے ٹی۔20 ورلڈ کپ میں سب سے زیادہ رنز بنانے والے کھلاڑی تھے جبکہ 2016 میں وہ اس فہرست میں دوسرے نمبر پر رہے۔لیکن مارچ میں جب انگلینڈ نے ہندوستان کا دورہ کیا تھا تو انہوں نے روہت شرما کے ساتھ ٹی۔ ٹوئنٹی سیریز میں اننگز کا آغاز کیا اور کہا کہ اب وہ اس مقام پر کھیلنا چاہتے ہیں۔ پانچویں ٹی 20 انٹرنیشنل میں انگلینڈ کے خلاف بڑی جیت میں روہت اور کوہلی واحد اوپننگ بیٹسمین تھے۔اسی میچ میں راہل کو ڈراپ کر دیا گیا کیونکہ انہوں نے پہلے چار میچوں میں صرف 15 رنز بنائے تھے جن میں دو صفر شامل تھے۔ وراٹ نے ہندوستان کے لئے ٹی۔ٹوئنٹی بین الاقوامی میچ میں اب تک صرف سات مرتبہ اننگ کا آغاز کیا ہے لیکن انہوں نے تسلیم کیا ہے کہ رائل چیلنجرز بنگلور (آر سی بی) کے لیے آئی پی ایل میں اوپننگ بیٹسمین کا کردار صرف ٹی ۔20 ورلڈ کپ کو ذہن میں رکھتے ہوئے کھیلا گیا تھا۔ اس دوران وراٹ نے 28.92 کی اوسط اور 119.46 کے اسٹرائیک ریٹ سے 405 رنز بنائے تھے۔ اس سال وراٹ نے 16 ٹی۔ 20 میچ کھیلے ہیں اور ان میں سے 15 آئی پی ایل میں تھے۔ اس دوران کوہلی نے پاور پلے میں 129.00 کے اسٹرائیک ریٹ سے رنز بنائے ہیں۔ لیکن پاور پلے کے اختتام پر وہ پھنسے ہوئے نظر آتے ہیں اور درمیانی اوورز میں ان کا اسٹرائیک ریٹ 112.57 ہے۔ دوسری طرف راہل آئی پی ایل میں اپنی ٹیم پنجاب کنگز (پی بی کے ایس) کے لیے سب سے زیادہ رنز بنانے والے تھے اور مقابلے میں 626 رنز کے ساتھ تیسرے نمبر پر تھے۔ اگرچہ پنجاب پلے آف میں جگہ بنانے سے چک گئی لیکن راہل نے غیر معمولی انداز اپناتے ہوئے چیمپئن چنئی سپر کنگز (سی ایس کے) کے خلاف 42 گیندوں پر ناٹ آؤٹ 98 رنز بناکر مقابلہ کا اختتام کیا تھا۔ راہل نے 2018 کے بعد سے آئی پی ایل میں سب سے زیادہ 2548 رنز بنائے ہیں اور 2020 میں اورنج کیپ جیتنے والے تھے۔ ٹی 20 ورلڈ کپ کے 15 ممبروں کا اعلان کرتے ہوئے چیف سلیکٹر چیتن شرما نے راہل اور روہت کو بھی صرف اوپنر قرار دیا جبکہ ایشان کشن کو بیک اپ اوپنر کے طور پر نامزد کیا گیا۔ تاہم انگلینڈ کے خلاف پہلے وارم اپ میچ میں روہت شرما کو آرام دیا گیا تھا اور ایشان راہل کے ساتھ اننگز کا آغاز کرنے آئے۔ ان دونوں بلے بازوں نے نصف سنچریاں کھیل کر اپنے دعوے کو مضبوط کیا ہے۔ وراٹ کا ٹی۔ 20 کپتان کے طور پر یہ آخری ورلڈ کپ ہے کیونکہ وہ پہلے ہی اعلان کر چکے ہیں کہ وہ اب اس فارمیٹ میں انڈین کرکٹ ٹیم کی کپتانی نہیں کریں گے۔ ہندوستان 24 اکتوبر کو دوبئی میں پاکستان کے خلاف ورلڈ کپ مہم کا آغاز کرے گا۔

Advertisement

Related Articles