ٹرمپ کے  انکار کے باوجود بھی ایران کے ساتھ سلامتی کونسل کی میٹنگ میں روس کی تجویز برقرار

ماسکو،امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی حمایت سے انکار کے بعد روسی صدر ولادیمیر پوتن کی جانب سے خلیج فارس اور ایران مسئلہ پر بات چیت کرنے کے لئے اقوام متحدہ سلامتی کونسل (یواین ایس سی) کے رکن ممالک جرمنی اور ایران کے لیڈروں کی ایک آن لائن کانفرنس منعقد کرنے کی تجویز اب بھی برقرار ہے۔

روس کے ڈپٹی وزیر خارجہ سرگئی ریابکوف نے اتوار کو اس امید کا دعوی کیا ہے۔
انہوں نے یہ دریافت کئے جانے پر کہ مسٹرٹرمپ کے بیان کے سامنے آنے کے بعد کانفرنس منعقد کرنے کی اپیل کیا ابھی بھی برقرار ہے تو انہوں نے کہا کہ ’’بیشک، ہاں۔‘‘
انہوں نے خلیج فارس میں تناؤ میں مزید اضافہ سے بچانے کے لئے امریکہ سے اس پہل کے عمل درآمد کے فوائد کا اندازہ لگانے کی بھی اپیل کی۔
واضح رہے کہ مسٹر ٹرمپ نے سنیچر کو کہاتھا کہ وہ ایران مسئلہ پر آن لائن چوٹی کانفرنس منعقد کرنے کی مسٹر پوتن کی پہل کی حمایت نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ اس کے بجائے وہ انتخابات کا انتظار کریں گے۔
اس سے پہلے جمعہ کو مسٹر پوتن نے اقوام متحدہ سلامتی کونسل کے اراکین جرمنی اور ایران کے لیڈروں کے اشتراک کے ساتھ خلیج فارس میں تناؤ کو ختم کے لئے ویڈیو کانفرنسنگ کرنے کا مشورہ دیا۔

Advertisement

Related Articles