صدرجوبائیڈن نے سعودی عرب سے تعلقات بہتر بنانے کا فیصلہ کیا ہے: بلنکن

ریاض/واشنگٹن،جون۔ امریکی وزیر خارجہ انٹنی بلنکن نے زور دے کر کہا ہے کہ ایک بہت ہی اہم رشتہ اور شراکت داری امریکا کو سعودی عرب کے ساتھ جوڑتی ہے۔ اس شراکت داری میں دونوں ملکوں کا انتہا پسندی، دہشت گردی کے خلاف مل کر لڑنا اور ایران سے نمٹنے کے لیے مشترکہ کوششیں کرنا شامل ہیں۔انہوں نے پریس بیانات میں مزید کہا کہ یمن کے بحران کے حل کے لیے مملکت کے ساتھ تعلقات بھی بہت اہم ہیں۔ امریکی وزیر خارجہ نے واضح کیا کہ امریکی صدر جو بائیڈن کی انتظامیہ نے سعودی عرب کے ساتھ تعلقات کو مضبوط بنانے کی اہمیت پر فیصلہ کیا ہے تاکہ دونوں ممالک کے درمیان مشترکہ مفادات کو بہتر طریقے سے حاصل کیا جا سکے۔انہوں نے یمن اب ایک حقیقی مگر قدرے نازک مسئلہ ہے۔ یمن میں دیر پا امن قائم کرنے کا ایک موقع موجود ہے۔ انٹنی بلنکن نے تقریباً دو ہفتے قبل اپنے سعودی ہم منصب شہزادہ فیصل بن فرحان آل سعود سے ملاقات کی تھی تاکہ علاقائی مسائل پر دونوں ممالک کے درمیان بڑھتے ہوئے تعاون پر تبادلہ خیال کیا جا سکے۔انہوں نے ایران کے جوہری پروگرام اور تہران کے خطے میں عدم استحکام پیدا کرنے والے رویے کی وجہ سے درپیش چیلنج پر بھی تبادلہ خیال کیا۔اس کے علاوہ امریکی وزیر نے اپنے سعودی ہم منصب کا یمن میں جنگ بندی کو مضبوط بنانے اور اس میں توسیع کے لیے مملکت کی کوششوں پر شکریہ ادا کیا۔قابل ذکر ہے کہ سعودی عرب نے ہمیشہ اس بات پر زور دیا ہے کہ تہران خطے میں عدم استحکام پیدا کرنے والی اپنی حرکات کو روکے، بین الاقوامی جہاز رانی کے لیے خطرہ نہ بنے، نیز بعض عرب ممالک میں ملیشیاؤں کی حمایت سے باز آئے اور دوسرے ممالک کی خود مختاری کا احترام یقینی بنائے تاکہ خطے میں حقیقی امن کا خواب پورا کیا جاسکے۔

Advertisement

 

Advertisement

Related Articles