ایکشن ٹیسٹ پاس کرنے کے بعد حسنین کو گیندبازی کی اجازت ملی

لاہور، جون ۔ پاکستان کے تیز گیند باز محمد حسنین کو لاہور میں آئی سی سی کے تسلیم شدہ مرکز میں آزادانہ دوبارہ تشخیص کے بعد بین الاقوامی کرکٹ میں باؤلنگ کرنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔ 22 سالہ حسنین کو رواں سال جنوری میں بگ بیش لیگ میں سڈنی تھنڈر کے لیے کھیلتے ہوئے امپائر جیرارڈ ایبوڈ نے مشکوک ایکشن کے لیے رپورٹ کیا تھا۔ اگلے ماہ پاکستان سپر لیگ کے دوران ان کے ایکشن کاٹیسٹ کئے جانے کے بعد انہیں گیندبازی سے روک دیاگیا تھا۔ اب ٹیسٹ میں معلوم ہوا ہے کہ ان کی کہنی کا لچیلاپن 15 ڈگری کی اجازت کے اندر ہے اور اس کی بولنگ بالکل درست ہے۔ حسنین کو معطلی کے دوران ڈومیسٹک کرکٹ میں باؤلنگ جاری رکھنے کی اجازت دی گئی تھی، حالانکہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے انہیں اپنے ایکشن کو تبدیل کرنے پر توجہ مرکوز کرنے کے لئے کہا اور ان کے ساتھ کام کرنے کے لیے ایک ہائی پرفارمنس کوچ عمر رشید کومقررکیاتھا۔ اس کے بعد حسنین نے 21 مئی کو اپنے باؤلنگ ایکشن کی دوبارہ تشخیص کی۔ رپورٹ کو آئی سی سی کے ضوابط کے تحت دوبارہ کرکٹ آسٹریلیا کے آزاد ماہرین کے ذریعہ تصدیق کی گئی تھی۔ بین الاقوامی ٹی20 میں ہیٹ ٹرک لینے والے حسنین آخری مرتبہ پاکستان کی جرسی میں دسمبر 2021 میں نظر آئے تھے جب ان کی ٹیم ویسٹ انڈیز کے خلاف کھیلی تھی۔

Advertisement

 

Advertisement

Related Articles