نواک جوکووچ خاتون افسر کو گیند مارنے کی وجہ سے یو ایس اوپن سے باہر

نیویارک ، دنیا کے نمبر ون ٹینس کھلاڑی نواک جوکووچ کو اتوار کے روز ہوئے یو ایس اوپن کے پری کوارٹر فائنل مقابلے میں ایک خاتون افسر کو گیند مارنے کی وجہ سے ٹورنامنٹ سے باہر کر دیا گیا ۔
امریکن ٹینس ایسوسی ایشن (یو ایس ٹی اے) نے ایک بیان جاری کر کے اس کی تصدیق کی ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ گرینڈ سلیم کے قواعد کے مطابق اگر کوئی کھلاڑی کسی افسر یا ناظرین کو زخمی کرتا ہے تو اس کے نتیجے میں اس پر جرمانہ عائد کرنے ساتھ اسے نااہل قراردیا جاتا ہے اور میچ ریفری نے نواک جوکووچ کو بھی قصوروار پایا ہے ۔
قواعد کے مطابق ٹورنامنٹ میں پری کوارٹر مقابلے تک پہنچنے پر جوکووچ کو دی جانے والی انعامی رقم کاٹ لی جائے گی۔ ساتھ ہی جو رینکنگ پوائنٹس کسی کھلاڑی کو ملتے ہیں ، وہ بھی کم کر دیےجائیں گے۔

دراصل، جوکووچ پری کوارٹر فائنل میچ کے دوران اسپین کے پابلو کیرینو بستا سے مقابلے میں پیلے سیٹ میں6 -5 سے ہار گئے تھے ۔ اسی دوران ان کاایک شاٹ سدھے خاتون افسر کی گردن میں جا لگا ، جس کی وجہ سے اسے کچھ وقت کے لئے سانس لینے میں تکلیف ہوئی ۔ تاہم جوکووچ اس کا حال دریافت کرنے خاتون کے پاس پہنچے تھے ۔ اس کے بعد ٹورنامنٹ ریفری کے ساتھ بات چیت کر کے امپائرنے کیرینو بسٹا کے مقابلہ جیتنے کا اعلان کردیا۔
سربیا کے کھلاڑی جوکووچ گرینڈ سلیم کی تاریخ میں باہر کئے جانے والے تیسرے کھلاڑی بن گئے ہیں ۔ اس سے پہلے 1990 میں آسٹریلیائی اوپن میں جان مکینرو اور 2000 میں فرنچ اوپن میں اسٹیفن کو باہر کا راستہ دکھایا گیا تھا۔

 

Advertisement

Related Articles