صدارتی انتخابات پر ممتا کی میٹنگ میں اپوزیشن پارٹیاں پہنچیں

نئی دہلی، جون۔مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ اور ترنمول کانگریس کی سربراہ محترمہ ممتا بنرجی کی طرف سے بلائی گئی اپوزیشن جماعتوں کی میٹنگ میں 16 جماعتوں کے لیڈر حکمراں قومی جمہوری اتحاد کو صدارتی انتخابات میں گھیرنے کے لیے مختلف حربوں پر تبادلہ خیال کر رہے ہیں۔ بدھ کو یہاں کانسٹی ٹیوشن کلب میں دوپہر میں شروع ہونے والی میٹنگ میں شریک ہونے والے اپوزیشن لیڈران کا خود محترمہ بنرجی نے ہال کے دروازے پر استقبال کیا۔ محترمہ بنرجی کے علاوہ راجیہ سبھا میں حزب اختلاف کے لیڈر ملک ارجن کھڑگے، نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے شرد پوار اور پرفل پٹیل، جنتا دل کے ایس کے ایچ ڈی دیوے گوڑا اور ایچ ڈی کمار سوامی، کانگریس کے جے رام رمیش اور رندیپ سرجے والا، سماج وادی پارٹی کے اکھلیش یادو، جموں کشمیر پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کی محبوبہ مفتی ، راشٹریہ لوک دل پارٹی کے جینت چودھری، کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کے ونے وشوام، راشٹریہ جنتا دل کے منوج جھا اور ترنمول کے سکھیندو شیکھر رائے وغیرہ حصہ لے رہے ہیں۔ دراوڑ منیترا کزگم، شیو سینا، نیشنل کانفرنس، آئی یو ایم ایل، بائیں بازو کی جماعتوں اور جے ایم ایم کے قائدین نے بھی میٹنگ میں پہنچے ہیں۔ ذرائع کے مطابق اے آئی ایم آئی ایم، تلنگانہ راشٹرا سمیتی اور عام آدمی پارٹی نے اجلاس میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اجلاس میں تمام اپوزیشن جماعتیں جولائی میں ہونے والے صدارتی انتخابات کے بارے میں گہرائی سے تبادلہ خیال کریں گی اور حکمران اتحاد کو چیلنج پیش کرنے کے لیے حکمت عملی پر کام کریں گی۔ صدارتی انتخابات 18 جولائی کو ہوں گے اور نتائج کا اعلان 21 جولائی کو کیا جائے گا۔

Advertisement

Related Articles