اکتوبر میں پٹرول 7.70 روپے اور ڈیزل 8.30 روپےمہنگا ہوا

نئی دہلی، اکتوبر۔بین الاقوامی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتیں بلند سطح پر رہنے کے درمیان گھریلوں سطح پرپٹرول اور ڈیزل میں اتوار کو مسلسل پانچویں دن بھی اچھال جاری رہا ۔سرکاری تیل کی مارکیٹنگ کمپنیوں نے ان دونوں کی قیمتوں میں 35-35 پیسے فی لیٹر کا اضافہ کیا، جس کے بعد دارالحکومت دہلی میں پٹرول 109.34 روپے فی لیٹر اور ڈیزل 98.07 روپے فی لیٹر کے ریکارڈ سطح پر پہنچ گیا۔ اس مہینے میں اب تک 31 دنوں میں سے 24 دن ان دونوں انڈھنوں کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے ۔ اس مہینے میں اب تک پیٹرول 7.70 روپے فی لیٹر اور ڈیزل 8.30 روپے فی لیٹر مہنگا ہو چکا ہے۔اس اضافے کے بعد ممبئی میں پٹرول 115.14 روپے اور ڈیزل 106.23 روپے فی لیٹر، مدھیہ پردیش کے دارالحکومت بھوپال میں پٹرول سب سے مہنگا 118.07 روپے فی لیٹر اور ڈیزل 107.50 روپے فی لیٹر، پٹنہ میں پٹرول 113.10 روپے اور ڈیزل 104.71 روپے فی لیٹر، بنگلورو میں پٹرول 113.15 روپے اور ڈیزل 104.09 روپے فی لیٹر پر پہنچ گیا ہے۔کولکتہ میں بھی پٹرول 109.79 روپے فی لیٹر اور ڈیزل 101.19 روپے فی لیٹر پر پہنچ گیا ہے۔ رانچی میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں صرف سات پیسے کا فرق رہ گیا ہے ۔ پٹرول 103.53 روپے اور ڈیزل 103.46 روپے فی لیٹر ہے ۔ نوئیڈا، دہلی این سی آر میں پٹرول 106.46 روپے اور ڈیزل 98.73 روپے فی لیٹر پر ہے ۔ اس وقت ملک کے تمام بڑے شہروں میں پٹرول کی قیمت 110 روپے فی لیٹر سے تجاوز کر گئی ہے۔ بیشتر شہروں میں ڈیزل بھی سنچری لگا چکا ہے ۔ مارکیٹ اسٹڈی اور کریڈٹ ریٹنگ فرم گولڈمین سیکس کی جانب سے اگلے سال تک برینٹ کروڈ کے 110 ڈالر فی بیرل تک پہنچنے کی رپورٹ کے بعد خام تیل میں مزید اضافہ ہوا تھا اور خام تیل بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔آئل مارکیٹنگ کمپنی انڈین آئل کارپوریشن کے مطابق دہلی میں پٹرول 109.34 روپے فی لیٹر اور ڈیزل 98.07 روپے فی لیٹر پر پہنچ گیا۔

Advertisement
Advertisement

Related Articles