‘چمبل ایکسپریس وے’ سے پسماندہ علاقے کو رفتار ملے گی: گڈکری

بھوپال، مرکزی سڑک ٹرانسپورٹ اور ہائی وے اور بہت چھوٹے، مختصر اور درمیانے درجے انٹرپرائز وزیر نتن گڈکری نے مدھیہ پردیش کو 45 سڑک کے منصوبوں کی سوغات دیتے ہوئے امید ظاہر کی کہ کہ چمبل ایکسپریس وے ( ‘اٹل بہاری واجپئی چمبل پروگریس وے’) موٹروے میں بدلے گا اور پسماندہ علاقوں میں ترقی کی رفتار تیز ہوگی. گڈکری نے منگل کو ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے 45 سڑک منصوبوں کا معنون اور سنگ بنیاد رکھا. یہ 45 منصوبوں تقریبا ساڑھے 11 ہزار کروڑ کی لاگت ہے. سنگ بنیاد اور معنون پروگرام کی وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان نے صدارت کی. واضح رہے کہ سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپئی کی برسی پر وزیر اعلی چوہان نے ‘چمبل پروگریس وے’ اس کا نام ‘اٹل بہاری واجپئی چمبل پروگریس وے’ کرنے کا اعلان کیا تھا. پہلے اس کا نام چمبل ایکسپریس وے تھا، جسے ریاستی حکومت نے چمبل پروگریس-انہوں نے کیا. اس موقع پر وزیر گڈکری نے مجوزہ چمبل ایکسپریس وے ( ‘اٹل بہاری واجپئی چمبل پروگریس وے’) کو پسماندہ علاقے میں ترقی کی رفتار کو تیز کرنے میں مددگار بتایا اور کہا کہ اس ایکسپریس وے کا کام جلد ہی شروع ہو جائے گا اور ہائی وے میں بدلے گا، یہ ایکسپریس وے تین ریاستوں کے پسماندہ علاقوں سے ہو کر گزریگا، اس کے لئے آٹھ ہزار کروڑ روپے کے اس کی منظوری دیتا ہوں. اس راستے سے اس علاقے کو ترقی کی نئی رفتار ملے گی. انہوں نے بتایا کہ یہ ایکسپریس وے 358 کلومیٹر طویل ہے، جس سے 309 مدھیہ پردیش سے، 17 کلومیٹر اتر پردیش اور 32 کلومیٹر راجستھان سے ہوکر گزریگا. اس ایکسپریس وے چمبل ندی کے متوازی ہوگا. اٹاوہ سے کوٹہ تک جائے گا. اس ایکسپریس وے آگے جاکر دہلی ممبئی کوریڈور سے جڑے گا. وہیں اس سے پہلے وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان نے کہا کہ یہ سڑک منصوبوں پردیش کے لئے وردان ثابت ہوں گی. اس کے ساتھ ہی انہوں نے نرمدا ندی کے علاقے میں نرمدا ایکسپریس وے بنانے کی بھی بات چیت کی. گڈکری نے جن 45 منصوبوں کا سنگ بنیاد اور معنون کیا ہے، ان میں 19 منصوبوں کا سنگ بنیاد اور 26 کاموں کو معنون شامل ہے. سنگ بنیاد اور معنون پروگرام میں سماجی انصاف اور امپاورمنٹ وزیر ڈاکٹر تھاورچند گہلوت، پنچایت راج، دیہی ترقی، زراعت اور کسان بہبود کے وزیر نریندر سنگھ تومر، مرکزی وزیر مملکت (آزادانہ چارج)، سیاحت اور ثقافت پرہلاد سنگھ پٹیل، مرکزی اسٹیل وزیر مملکت پھگن سنگھ کلستے، مرکزی سڑک سے نقل و اور ہائی وے ریاست وزیر جنرل وی کے. سنگھ (ریٹائرڈ) سمیت مدھیہ پردیش حکومت کے وزیر، منصوبے علاقے سے منسلک رہنما اور رکن اسمبلی بھی شامل رہے. یہ سڑک منصوبوں ریاست کے تقریباً 49 اسمبلی حلقوں سے ہوکر گزرنے والی ہے. اسے سیاسی نقطہ نظر سے بھی کافی اہم مانا جا رہا ہے. ایسا اسلئے، کیونکہ یہ سڑک منصوبوں جن علاقوں سے منسلک ہے ان میں سے بہت سے علاقوں میں آئندہ وقت میں اسمبلی کے ضمنی انتخابات بھی ہونے والے ہیں.

Advertisement

Related Articles