حکومت ہندوستان کو عالمی طبی مرکز بنانے کے لیے پرعزم: مانڈویہ

نئی دہلی، مئی۔ صحت اور خاندانی بہبود کے مرکزی وزیر منسکھ مانڈویہ نے ہندوستان کو عالمی طبی مرکز بنانے کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے جمعرات کو کہا کہ ملک میں اپنا علاج کروانے کے خواہشمند لوگوں کی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے ایک پورٹل بنایا جا رہا ہے۔ یہاں برانڈ انڈیا قائم کرنے کے لیے انڈین فارن سروس کے سینئر افسران کی ایک گول میز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر مانڈویہ نے کہا کہ جو غیر ملکی ہندوستان میں اپنا علاج کرانا چاہتے ہیں ان کے لیے قابل اعتماد معلومات کی سہولت اور آسانی کے لئے ایک ون اسٹیپ پورٹل تیار کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان اپنے صحت کی دیکھ بھال کے نظام اور عالمی معیار کی طبی سہولیات کے ساتھ پوری دنیا کے لئے ایک کشش بن گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ آج دنیا کے مختلف ممالک سے لوگ بڑی تعداد میں علاج کے لیے ہندوستان آ رہے ہیں۔ طبی سیاحت کو مزید فروغ دینے کے مقصد کے ساتھ حکومت نے ہیل ان انڈیا پروگرام شروع کیا ہے۔ اسی طرح ہیل بائے انڈیا پروگرام شروعات کی گئی ہے۔ یہ ہندوستانی طبی کارکنوں کو پوری دنیا میں سفر کرنے اور ایک صحت مند عالمی معاشرے کے لیے اپنا حصہ ڈالنے کا موقع فراہم کرے گا۔ انہوں نے مزید کہاکہ ہم اپنی روایتی ادویات کی صنعت کو مزید مضبوط کرکے اور ہیل ان انڈیا اور ہیل بائے انڈیا اقدامات کو فروغ دے کر ہندوستان کو عالمی طبی مرکز بنانے کے لیے پرعزم ہیں۔ طبی سیاحت کو مزید مستحکم کرنے کے لیے اقدامات کرنے کی ضرورت پر روشنی ڈالتے ہوئے مرکزی وزیر نے کہا کہ ہندوستان کے طبی دورے کرنے کے خواہشمندوں کے لیے پوری دنیا میں ہندوستانی سفارت خانوں میں سہولتی مراکز قائم کیے جانے چاہئیں۔ اس کے علاوہ ہندوستان میں زیر علاج لوگوں کے تاثرات کو حاصل کرنے کے لیے ایک نظام بنایا جا سکتا ہے۔ اس سے طبی سیاحت کو برانڈ انڈیا بنانے میں مدد ملے گی۔ طبی میدان میں دیگر ممالک کے ساتھ معاہدے کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے مسٹر مانڈویہ نے کہا کہ ہنر مند نرسیں فراہم کرنے کے لیے ہمارے جاپان کے ساتھ معاہدے ہیں۔ ہنر مند طبی افرادی قوت کے لیے دوسرے ممالک کے ساتھ بھی اسی طرح کے معاہدے کیے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میڈیکل ٹورازم کو فروغ دینے کے لیے ایسے امکانات تلاش کیے جانے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان نے خود کو آیوش کے مرکز کے طور پر قائم کیا ہے۔ حال ہی میں آیوش آئیکون کو ریلیز کرنے کا اعلان کیا گیا۔ یہ ہندوستان میں آیوش کی مصنوعات کو صداقت فراہم کرے گا اور روایتی ادویات کی صنعت کو فروغ دے گا۔ آیوروید کے علاج کے لیے دوسرے ممالک سے ہندوستان آنے والوں کے لیے ایک خصوصی ویزا زمرہ بنایا گیا ہے۔ آیوروید کے علاج کے لیے 165 ممالک کے ساتھ میڈیکل ویزا اور میڈیکل اٹینڈنٹ ویزا کا انتظام کیا گیا ہے۔

Advertisement

Related Articles